View Single Post
Old 04-03-2016, 11:45 PM   #1
raji35

Users Flag!
 
Join Date: Oct 2013
Location: Karachi
Posts: 8
raji35 is on a distinguished road
New Maqasad E Baisat E Rasool S.A.W.W

مقاصد بعثتِ رسول صلیٰ اللہ علیہ وسلّم:
اللہ کے رسول کی بعثت کے جو مقاصد قرآن میں بیان ہوئے ہیں وہ چار ہیں جو کہ یہ
ہیں،تلاوت،تزکیہ،تعلیمِ کتاب اور حکمت۔
اللہ تعالیٰ نے سورۃ ال عمران میں فرمایا:
لَقَدْ مَنَّ اللَّهُ عَلَى الْمُؤْمِنِينَ إِذْ بَعَثَ فِيهِمْ رَسُولًا مِنْ أَنْفُسِهِمْ يَتْلُو عَلَيْهِمْ آيَاتِهِ وَيُزَكِّيهِمْ وَيُعَلِّمُهُمُ الْكِتَابَ وَالْحِكْمَةَ وَإِنْ كَانُوا مِنْ قَبْلُ لَفِي ضَلَالٍ مُبِينٍ#

ترجمہ:"یقیناََ اللہ نے بڑا احسان کیا مومنوں پر جب اُس نے اُنہی میں سے ایک رسول
بھیجا جو اُن پر اللہ کی آیات پڑھتے ہیں اور انکا تزکیہ کرتے ہیں اور ان کو تعلیم
دیتے ہیں کتاب اور حکمت کی"

یعنی نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلّم لوگوں کو اللہ کی آیات پڑھ کر سُناتے تھے تاکہ
اُن کا تزکیہ ہو اور کتاب اور حکمت کی تعلیم دیتے تھے۔اس سے پہلے تو یہ لوگ سراسر گمراہی میں تھے۔انکو پتہ ہی نہ تھا کہ پاکیزگی کیسے حاصل کی جاتی ہے۔
اللہ تعالیٰ نے سورہ طحہ میں فرمایا ہے:

"وَمَنْ يَأْتِهِ مُؤْمِنًا قَدْ عَمِلَ الصَّالِحَاتِ فَأُولَٰئِكَ لَهُمُ الدَّرَجَاتُ الْعُلَىٰ#

جَنَّاتُ عَدْنٍ تَجْرِي مِنْ تَحْتِهَا الْأَنْهَارُ خَالِدِينَ فِيهَا ۚ وَذَٰلِكَ جَزَاءُ مَنْ تَزَكَّىٰ#
ترجمہ:
" اور جو اس کے حضور مومن کی حیثیت سے حاضر ہوگا ،جس نے نیک عمل کئے
ہوں گے،ایسے سب لوگوں کے لئے بلند درجے ہیں۔سدا بہار باغ ہیں جن کے نیچے
نہریں بہ رہی ہوں گی ۔ ان میں وہ ہمیشہ رہیں گے۔یہ جزا ہے اس شخص کی جو پاکیزگی
اختیار کرے۔"
raji35 is offline   Reply With Quote