Thread: Quran Hadees
View Single Post
Old 02-12-2019, 10:03 AM   #1
journalist
Moderator

Users Flag!
 
Join Date: Nov 2011
Posts: 13,664
journalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond repute
Default Quran Hadees

قال اللہ تعالیٰ و قال رسول اللہ

باپ نے یہ داستان سن کر کہا دراصل تمہارے نفس نے تمہارے لیے ایک اور بڑی بات کو سہل بنا دیا اچھا اس پر بھی صبر کروں گا اور بخوبی کروں گا کیا بعید ہے کہ اللہ ان سب کو مجھ سے لا ملا ئے، وہ سب کچھ جانتا ہے اور اس کے سب کام حکمت پر مبنی ہیں۔پھر وہ ان کی طرف سے منہ پھیر کر بیٹھ گیا اور کہنے لگا کہ ہا ئے یوسف! وہ دل ہی دل میں غم سے گھٹا جا رہا تھا اور اس کی آنکھیں سفید پڑ گئی تھیں ۔ بیٹوں نے کہا خدارا! آپ تو بس یوسف ہی کو یاد کیے جاتے ہیں نوبت یہ آ گئی ہے کہ اس کے غم میں اپنے آپ کو گھلا دیں گے یا اپنی جان ہلاک کر ڈالیں گے۔ (سورۂ یوسف: 83تا 85)

سیدنا ابوہریرہ رضی اللہ عنہ راوی ہیں کہ رسول کریم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے فرمایا: صدقہ دینا مال میں کمی نہیں کرتا اور جو شخص کسی کی خطا معاف کر دیتا ہے تو اللہ تعالیٰ اس کی عزت میں اضافہ کرتا ہے۔ نیز جو شخص خدا کے لیے تواضع و عاجزی اختیار کرتا ہے، تو اللہ تعالیٰ اس کا مرتبہ بلند کرتا ہے۔ (مسلم، مشکوٰۃ)سیدنا ابو ہریرہؓ سے روایت ہے نبیؐ نے فرمایا: جب تم میں سے کوئی چھینک لے تو اسے الحمدُللہ کہنا چاہیے اور اس کے بھائی یا ساتھی کو اس کے لیے یر حمک للہ کہنا چاہیے اور جب وہ اس کے لیے یر حمک للہ کہے تو اس چھینک لینے والے کو یھدیکم اللہ و یصلح بالکم (اللہ تعالیٰ تمہیں ہدایت دے اور تمہارے حال کی اصلاح فرمائے) کہنا چاہیے۔ (بخاری۔ ریاض الصالحین)
journalist is offline   Reply With Quote