Urdu Planet Forum -Pakistani Urdu Novels and Books| Urdu Poetry | Urdu Courses | Pakistani Recipes Forum  

Go Back   Urdu Planet Forum -Pakistani Urdu Novels and Books| Urdu Poetry | Urdu Courses | Pakistani Recipes Forum > General Forum > News and Current Affairs

Notices

News and Current Affairs All kind of news and Current Affairs will goes here

Reply
 
Thread Tools Display Modes
Old 05-05-2020, 11:50 AM   #1
journalist
Moderator

Users Flag!
 
Join Date: Nov 2011
Posts: 13,740
journalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond repute
Default آگے کیا ہوتا ہے

پاکستان میں اچھا سیاستدان اسی کو کہاجاتا ہے جو ظاہری طور پر یا زبان سے اچھے اچھے الفاظ ادا کرے اور پس پردہ اپنے کام کرواتا رہے ۔ عام طور پر ایسے سیاستدانوں کو کامیاب سیاستدان کہا جاتا ہے اور ان کی دو عملی یا دو رخی پالیسی کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ اسی کو سیاست کہتے ہیں ۔ ملک کی تین اہم پارٹیاں ایسی ہیں جو اقتدار کے ایوانوں میں ہیں ایک دو اتحادی ہیں ۔ تینوں بڑی یا معروف پارٹیوں میں شامل لوگوں اور ان پارٹیوں کا یہی طریقہ رہا ہے قوم کو اتحاد اور یکجہتی کے درس دیے جاتے ہیں ، کورونا سے مقابلے کے لیے سیاست چھوڑنے اور کورونا پر سیاست نہ کرنے کے مشورے دیے جاتے ہیں اور دوسری جانب ان کے سارے کام جاری ہیں ۔ یہ معاملہ حکومت اور اپوزیشن ہی کا نہیں خود حکومتی صفیں ایسے پھٹی ہوئی ہیں جیسے کورونا کی وجہ سے مساجد میں نمازیوں میں فاصلہ کرا دیا گیا ہے ۔ کبھی ایک اتحادی ناراض تو کبھی دوسرے کو لارے لپے دینا ،حکومت صرف اپوزیشن سے نہیں لڑ رہی اسے اپنے اتحادیوں کو ایک رکھنا بھی بڑا مشکل ہو رہا ہے ۔ آپس میں بھی سیاست کی جا رہی ہے ۔ اندر کچھ نہ کچھ چل رہا ہے ایک دن خبر آتی ہے کہ شریف خاندان اور چودھری برادران کے خلاف نیب میں تحقیقات جاری ہے اگلے دن چودھری برادران کی خبر آتی ہے کہ حکومت میں شامل رہنے کے لیے چودھری برادران نے مزید شرائط پیش کر دیں ۔ یہ دونوں خبریں الگ الگ پڑھی جائیں تو معمول کی بات ، ورنہ ملا کردیکھتے ہی بات سمجھ میں آ جاتی ہے کہ کوئی سیاست اندرچل رہی ہے ۔ بظاہر تو چودھری برادران نے ترقیات کاموں کے لیے بجٹ کے طور پر20ارب روپے ، بلدیاتی انتخابات کے لیے پیکیج اور تین اضلاع کا مکمل کنٹرول مانگ لیا ہے ۔ جق بجائے خود قابل اعتراض بات ہے۔کیا وفاقی حکومت میں شامل حکمراں پارٹی کے کسی بھی علاقے کے 6اراکین کو20ارب روپے کاترقیاتی بجٹ دیا جاتا ہے ۔ حیرت ہے اتحادی پارٹی20 ارب کا مطالبہ کر رہی ہے ۔ اسے بھی معلوم ہے کہ ہماری اہمیت کتنی ہے اور حکومت ہم کو یہ رقم نہیںتو کافی بڑی رقم دے دے گی ۔ بلدیاتی انتخابات کے لیے بھی پیکیج مانگا گیا ہے ۔ لیکن تین اضلاع پرمکمل کنٹرول کے کیامعنی ہیں ۔ وہاں سے دوبارہ انتخابات جیتنا اور کسی دوسرے کو دخل اندازی کا موقع نہ دینا مقصد ہے؟ سب سے بڑی اور قابل اعتراض بات یہ ہے کہ چودھری برادران نے ریکارڈ پر یہ بات کہی ہے کہ ہم نے مطالبات کی فہرست جہانگیر ترین کی سربراہی میں قائم کمیٹی کو دے دی ہے ۔ سوال اب حکومت ہی سے ہے کہ اگر چودھری برادران کے خلاف نیب میں کیس چل رہے ہیں تو ان کوبالکل ہی الگ کر دینا چاہیے ۔ وزیر اعظم عمران خان کا اصول تو یہی ہے کہ جوں ہی کسی کا نام تحقیقات میں آ جائے اس سے استعفیٰ کا مطالبہ کرتے تھے خواہ وزیر ہو یااعظم ۔اب انہیں چاہیے کہ چودھری برادران کو خاموش رہنے کا مشورہ دیں اور ان سے کہیں کہ ان کے خلاف چونکہ نیب میں کیسز ہیں اس لیے وہ20 ارب کا مطالبہ کرنے کے بجائے استعفیٰ دیں ۔ لیکن پاکستانی سیاست کی یہی خصوصیت ہے کہ جو مطالبات اصل ہیں ان کا اخبارات میں ذکر ہی نہیں ہے ۔ دو ایک روز میں نیب کے کیسزمیں ریلیف ملنے کی خبریں آ جائیں گی جو20ارب روپے سے زیادہ پر بھاری ریلیف ہو گی ۔ ایک دن مقدمات کی خبر اور دوسرے دن مطالبات کی ۔ لیکن چودھری برادران لگے ہاتھوں ایک اور انکشاف کر گئے ہیں کہ حکومتی پارٹی کے اہم آدمی جو نیب زدہ ،ایف آئی اے کے چینی بحران سے متعلق رپورٹ اور فارنزک رپورٹ کا حصہ ہیں وہ حکومتی کمیٹی کے سربراہ ہیں۔ وزیراعظم عمران خان سے سوال پوچھا جانا چاہیے کہ جہانگیر ترین حکومت کی جانب سے کمیٹی کے سربراہ کیوں ہیں؟ ان کے خلاف الزامات ہیں تحقیقاتی رپورٹ میں چینی مافیا کے طور پر ان کا نام آیا ہے۔ نا جائز رقم کمانے کا الزام ہونے کے باوجود وزیراعظم جہانگیر ترین ہی کو پارٹی بچانے اور حلیفوں سے مذاکرات کے لیے استعمال کر رہے ہیں۔ اور نیب ہے کہ روز نئے مقدمات درج کرتا ہے کسی کا بھی فیصلہ نہیں آتا۔ یہ مقدمات بھی سیاست کے لیے استعمال ہوں گے؟ معاملہ ایک دو کا ہو تو استثنا دیا جا سکتا تھا یا مجبوری سمجھا جاسکتا ہے۔ لیکن وزیراعظم عمران خان نیازی کا تو کمال یہ ہے کہ جن کرپٹ لوگوں کو پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ نے بڑی مشکلوں سے تیار کیا تھا وہ ایک ہی ہلے میں انہیں لے اُڑے اور اپنی پارٹی میں اہم ذمہ داریاں دے دیں اس کا نتیجہ یہی تو ہونا تھا ۔سابق معاون خصوصی اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان نے بھی بڑے گلے شکوے کیے ہیں۔ اطلاعات کے شعبے کے ساتھ وزیراعظم کی تصویر کشی کا معاملہ بھی جڑا ہوا ہے اور اخبارات کے اربوں روپے دینے کے واجبات کی کہانی بھی ہے۔ ابھی تو فردوس عاشق اعوان نے اس کرپشن کے دروازے سے پردہ نہیں اُٹھایا لیکن ایک کردار کی نشاندہی کر دی ہے اور وہ ہیںوزیراعظم کے پرنسپل سیکرٹری اعظم خان۔ ان کے خلاف وزیراعظم کی پارٹی کے سابق سیکرٹری جنرل جہانگیر ترین نے بھی شکایت کی اور اس کے علاوہ سابق چیف سیکرٹری پختونخوا شہزاد ارباب نے بھی وزیراعظم سے ان کی شکایت کی لیکن وزیراعظم نے تینوں شکایات سننے کے باوجود اعظم خان کے خلاف کسی تحقیقات یاکارروائی کا اشارہ بھی نہیں دیا اس کا صاف اور واضح مطلب یہ ہے کہ حکومتی صفوں میں بھی جو کچھ ہو رہا ہے اس میں وزیراعظم کی رضا مندی شامل ہے۔ ورنہ ایک سیکرٹری کی یہ مجال نہیں ہو سکتی کہ وہ اتنے بڑے بڑے لوگوں کے خلاف کارروائیاں کرے یا وہ بھی شریک نظر آئے ۔سب سے زیادہ قابل افسوس بات تو ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کے ساتھ ہوئی کہ انہیں استعفیٰ دینے کے لیے پارٹی کے سربراہ یا کسی عہدیدار نے نہیں کہا بلکہ وزیراعظم کے پرنسپل سیکرٹری نے استعفیٰ دو یا ڈی نوٹیفائی کر دیں گے کی دھمکی دی۔ البتہ اس بارے میں یقین سے کہا جا سکتا ہے کہ وزیراعظم کے پرنسپل سیکرٹری اور شاید وزیراعظم خود بھی اپنے نئے معاون خصوصی برائے اطلاعات سے اس طرح سبکدوش ہونے کو نہیں کہہ سکیں گے۔
journalist is offline   Reply With Quote
Reply

Bookmarks

Tags
آگے, کیا, ہوتا, ہے


Currently Active Users Viewing This Thread: 1 (0 members and 1 guests)
 
Thread Tools
Display Modes

Posting Rules
You may not post new threads
You may not post replies
You may not post attachments
You may not edit your posts

BB code is On
Smilies are On
[IMG] code is On
HTML code is Off

Forum Jump

Similar Threads
Thread Thread Starter Forum Replies Last Post
Islami Maloomat journalist Islamic Maloomat 1 10-01-2020 09:32 PM
Health n Fitness journalist Health and Fitness 0 11-02-2017 11:26 AM
***بوائے فرینڈز*** FM Rao Urdu Adab 0 02-02-2015 11:33 AM
~*~* نگوڑ ماری~*~* Rania Short Urdu Stories/Afsaany 1 06-11-2012 09:04 PM
<><><> عشق حقیقی <><><> Rania Urdu Adab 5 01-14-2012 06:05 PM


All times are GMT +6. The time now is 09:34 PM.


Powered by vBulletin® Version 3.8.9
Copyright ©2000 - 2020, vBulletin Solutions, Inc.