Urdu Planet Forum -Pakistani Urdu Novels and Books| Urdu Poetry | Urdu Courses | Pakistani Recipes Forum  

Go Back   Urdu Planet Forum -Pakistani Urdu Novels and Books| Urdu Poetry | Urdu Courses | Pakistani Recipes Forum > Islam > Islam > Islamic Maloomat

Notices

Reply
 
Thread Tools Display Modes
Old 03-23-2018, 12:09 PM   #1
journalist
Moderator

Users Flag!
 
Join Date: Nov 2011
Posts: 13,664
journalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond reputejournalist has a reputation beyond repute
Default Islami Maloomat 5

دارالعلوم دیوبند سے پوچھیے۔۔۔!

قبضے سے پہلے فروخت کرنا
سوال: ہم اپنے شہر کے کسی رائس مل والے سے موبائل پر بات کرکے ان سے ایک ٹرک بھرا ہوا چاول کے لیے سودا طے کرلیتے ہیں۔ پھر دوسرے شہر بات کرکے کچھ منافع پر فروخت کرتے ہیں۔ اپنے شہر والے رائس مل والے کو کال کرکے کہتے ہیں کہ ہمارے چاول کی ٹرک بھر کر فلاں شہر فلاں آدمی کے نام بھیج دو۔ کیا اس طرح کرنا جائز ہے؟
جواب: صورت مسؤلہ میں آپ رائس مل والے سے ٹرک بھری ہوئی چاول کا سودا کرنے کے بعد یعنی خریدنے کے بعد اسے خود یا بذریعہ وکیل اپنے قبضہ وتحویل میں لے کر پھر دوسرے کے ہاتھ منافع کے ساتھ فروخت کرسکتے ہیں تاکہ ضرر یا غرر کا اندیشہ نہ رہے اور قبضے سے پہلے دوسرے سے بیچنا درست نہیں۔
(فتوی:484-461/M-4/1438)
*۔۔۔*۔۔۔*
پھل آنے سے پہلے باغ کا سودہ کرنا
سوال: پھل آنے سے پہلے باغ بیچنا کیسا ہے؟
جواب: جائز نہیں ہے، یہ معدوم کی بیع ہے اور اللہ کے رسولؐ نے معدوم کی بیع سے منع فرمایا۔ (ترمذی)
(فتوی:987-1021/S-9/1438)
*۔۔۔*۔۔۔*
شیئرز کی خرید و فروخت
سوال: کیا کسی کمپنی کے شیئرز کی خرید وفروخت جائز ہے یا نہیں؟
جواب: کمپنی کے شیئرز کی خرید وفروخت حسب ذیل شرائط کے ساتھ جائز ہے:
(۱) کمپنی کا اصل کاروبار حلال ہو، حرام کاروبا رمیں ملوث نہ ہو۔
(۲) اس کمپنی کے کچھ منجمد اثاثے وجود میں آچکے ہوں، یعنی رقم صرف نقد کی شکل میں نہ ہو۔
(۳) اگر کمپنی سودی لین دین کرتی ہے تو اس کے خلاف آواز اٹھائی جائے۔
(۴) تقسیم منافع کے وقت، نفع کا جتنا حصہ سودی ڈپازٹ سے حاصل ہوا ہے، اس کو صدقہ کردے۔
(فتوی: 216/م236214/م)
*۔۔۔*۔۔۔*
ایڈوانس بکنگ کرنا
سوال: میرا سیمنٹ کا بزنس ہے، اکثر گاہک سیمنٹ کی پیشگی ادائیگی کر کے ایک ہی ریٹ/قیمت پر بکنگ کرتے ہیں جب کہ آنے والے دنوں میں ریٹ کم زیادہ ہوتا ہے۔ فکس ریٹ شدہ آنے والے دنوں میں مارکیٹنگ ریٹ میں اگر کمی آئی ہو تو میرا فائدہ ہوگا اور اگر زیادتی ہوئی تو میرا نقصان، تو اس صورت میں کیا بکنگ سکتے ہیں؟
جواب: اگر سیمینٹ کی مقدار، اس کی نوعیت، اس کے تمام ضروری اوصاف اور ادائیگی کا دن اور تاریخ وغیرہ متعین ہوجائے اور دو ٹوک طریقے پر خریدی جانے والی سیمینٹ کی قیمت بھی متعین کرلی جائے، مثلاً خریدار کہے کہ میں نے فلاں قسم کی سیمینٹ کے50 کلو والے اتنے کٹے فی کٹہ 500 روپیے پر خریدے، جس کی ادائیگی فلاں مہینے کی فلاں تاریخ اور دن میں ہوگی اور بیچنے والا منظور کرلے اور خریدار اسی وقت بیچنے والے کو پورا پیسہ حوالہ کردے تو یہ معاملہ، بیع سلم کے طور پر شرعاً جائز ودرست ہوگا۔ اب ادائیگی کی متعینہ تاریخ میں سیمینٹ کی قیمت خواہ کچھ بھی ہو، بیچنے والا خریدار کو حسب معاملہ طے شدہ متعینہ سیمینٹ کی ادائیگی کرے گا۔ اور اگر معاملہ اس طرح ہو کہ فلاں تاریخ میں اگر سیمینٹ کا ریٹ گھٹ گیا تو اْس وقت کے ریٹ سے لیں گے اور اگر بڑھ گیا تو موجودہ ریٹ سے لیں گے جیسا کہ بہت سے لوگ اسی طرح معاملہ کرتے ہیں تو یہ شرعاً جائز نہ ہوگا؛ کیوں کہ ریٹ کا گھٹنا یا بڑھنا، نیز کم گھٹنا یا بڑھنا یا زیادہ گھٹنا یا بڑھنا ابھی کچھ معلوم نہیں، پس اس معاملے میں کوئی ایک ریٹ واضح طور پر متعین نہیں کیا گیا۔
(فتوی:845-839/N-8/1438)
*۔۔۔*۔۔۔*
حرام پرندوں کی خرید و فروخت
سوال: ایسے پرندوں کی تجارت کرنا جن کا کھانا حلال نہیں ہے، حرام ہے یا حلال ہے؟
جواب: اگر ان پرندوں کی کھال ہڈی وغیرہ کار آمد ہو تو ان کی بیع وشرا درست ہے۔
(فتوی:574-663/L-6/1439)
*۔۔۔*۔۔۔*
جائداد پر نظربد لگنا
سوال: کیا زمین اور جائداد پر بھی نظر بد ہو سکتی ہے؟ اگر ہاں! تو کتاب اور سنت کی روشنی میں اس کا حل اور دعا کیا ہے؟
جواب: آثار وروایات سے یہ بات ثابت ہے کہ زمین وجائداد کو بھی نظر لگ سکتی ہے، ایک روایت میں ہے کہ ایک عورت، رسول اللہؐ کے پاس آئی اور کہنے لگی کہ ہم کھیتی والے ہیں اور ہمیں اس پر نظر بد لگنے کا اندیشہ ہوتا ہے تو نبی کریمؐ نے حکم فرمایا کہ اس جگہ میں جماجم (کھوپڑی) لگادی جائے۔ (شامی زکریا)
نظر بد سے بچنے کے لیے کھوپڑی یا لکڑی کا بڑا پیالہ وغیرہ لگادینے کا فائدہ یہ ہوگا کہ دیکھنے والے کی نظر پہلے اس پر پڑے گی تو طبیعت مکدر ہوجائے گی اور مال وجائداد کی طرف حیرت واستعجاب کی نظر نہیں پڑے گی۔
(فتوی: 475-497/M-5/1439)
journalist is offline   Reply With Quote
Reply

Bookmarks

Tags
islami, maloomat


Currently Active Users Viewing This Thread: 1 (0 members and 1 guests)
 
Thread Tools
Display Modes

Posting Rules
You may not post new threads
You may not post replies
You may not post attachments
You may not edit your posts

BB code is On
Smilies are On
[IMG] code is On
HTML code is Off

Forum Jump

Similar Threads
Thread Thread Starter Forum Replies Last Post
ISLAMI MALOOMAT journalist Islamic Maloomat 0 06-12-2015 01:49 PM
ISLAMI MALOOMAT journalist Islamic Maloomat 0 06-01-2015 12:40 PM
ISLAMI MALOOMAT 4 journalist Islamic Maloomat 1 05-05-2015 01:25 AM
ISLAMI MALOOMAT 3 journalist Islamic Maloomat 0 05-04-2015 03:32 PM
ISLAMI MALOOMAT 1 journalist Islamic Maloomat 0 05-04-2015 03:30 PM


All times are GMT +6. The time now is 08:30 PM.


Powered by vBulletin® Version 3.8.9
Copyright ©2000 - 2019, vBulletin Solutions, Inc.